Fri. Dec 13th, 2019

scifi.pk

Urdu Science & Technology

انٹرنیٹ پر فائل شیئر/شتراک کرنے کا پسندیدہ نیٹ ورک

1 min read

انٹرنیٹ کے تمام استعمال کا چوتھا حِصّہ ’’بِٹ ٹورینٹ‘‘ استعمال کرتا ہے، یہ موسیکی سے لیکر فلموں تک ہر قسم کی فائلز شیئر ،اشتراک کرنے کا نظام ہے. پہلی دفعہ ریسرچرز نےکسی بھی ملک کی معاشی حالت اور اس کے لوگ جس قسم کی فائلز ’’بِٹ ٹورنٹ‘‘سےڈاونلوڈ کرتے ہیں ان کے درمیان ایک رشتہ بنایاہے. اس سے بہت سی نئی باتیں سامنےآئی ہیں جس سے قانون نافذ کرنے والے ادارےانٹرنیٹ پرجملہ موادچوری کرنے والے کو آسانی سےشناخت کرسکیں گے.نیدر لینڈ کی Delft یونیورسٹی کے کمپیوٹر سائنسدان Johan Pouwelse کہتے ہیں کہ ریسرچرز کو ایک بہت دلچسپ اور تعمیری نقطہ نظر مل گیا ہے اور اس سے پہلے میں نے اس طرح کی تھقیق پہلے نہیں دیکھی.
بِٹ ٹورنٹ P2P مواصلاتی پروٹوکول کہلاتاہے. یہ دوسرے روائیتی نیٹ ورکس کی طرح نہیں ہے جنکی معلومات مرکزی سرور پر محفوظ ہوتی ہیں، جو گُوگل، فیسبُک جیسی خدمات مہیا کرتے ہے، P2P کا انحصار استعمال کندہ پر ہوتا ہےجو اپنے وسائل براہِ راست اپنے استعمال کرنے والوں کو مہیا کرتاہے. یہ ٹیکنالوجی ’’ساکائپ‘‘ سے لیکر امریکن انٹیلیجنس شیئرنگ نیٹ ورکس تک سب کو سپورٹ فراہم کرتی ہے. اگرچہ لوگ بِٹ ٹورنٹ کو قانونی مواد، جیسے مفت سافٹ وئیرز، کے لئے استعمال کرتے ہیں، یہ نیٹ ورک غیر قانونی طور پر کاپی رائٹ موسیکی، فلمیں اور گیمز شیئرنگ کے لئے بھی بہت پُرکشش ثابت ہُواہے.پچھلےماہ میں فائٹنگ چیمپین شپ کروانے والی ایک کمپنی نےنیویارک کے ایک باشندے کے خلاف لاکھوں ڈالر کا کیس فائل کیاہےاور اُس نے یہ بات تسلیم کی ہے کہ اس نےpay-per-view ایونٹس کومشہوربِٹ ٹورنٹ کی Pirate Bay پر اَپ لوڈ کیا ہے.
بِٹ ٹورنٹ کا غیرمرکزی طریقہ کار نہ صرف قانون نافذ کرنے والوں کےلئےچیلنج ہے بلکہ استعمال کرنے والوں کے روّیے پر ریسرچرز کےلئے بھی. تفتیش کندگان أسانی سے مرکزی سرور سے معلومات حاصل نہیں کرسکتے،لیکن انفرادی استعمال کندہ پر نظر رکھتے ہوئےاجتماعی تصویر حاصل کرسکتے ہیں. لہذا کمپُوٹر سائنسدانوں نے اپنے ساتھیوں کی مدد سے ایک پلگ۔اِن سافٹ وئیر جسے ’’اونو‘‘ کہتے ہیں تیار کیا ہے. یہ سافٹ وئیر بِٹ ٹورنٹ کی ڈاون لوڈ سپیڈ کو تیز کردیتا ہے. اس فائدے کے متبادل میں ریسرچ مقاصد کے لئےاونو کے 1.4 ملیّن استعمال کندگان اپنی فائل شیئرنگ رویے کی معلومات جاری کردیتے ہیں جیسے ڈاون لوڈ کا وقت، اور شیئر کی ہوئی فائل کا سائز. استعمال کندہ کی معلومات اور پُرکشش تعاون کو خفیہ رکھنے کےلئbittorrent-logo-largeےریسرچرز شیئر کی ہوئی فائل جکا مواد اور ڈیٹا اکٹھا نہیں کرتے.وہ ڈیٹا کو بےنام بنانے کےلئے ایک اصول بھی استعمال کرتے ہیں جس سے ریسرچرز خود بھی استعمال کندہ کا أئی پی ایڈریس نہیں جان سکتے،جس سے انھیں تلاش کیا جاسکے. ریسرچرز نےبہت سمجھداری سے ایک طریقہ دریافت کیا ہے جس میں فائل کے مواد کی معلومات لئے بغیر وہ اس بات کا اندازہ لگا سکتے ہیں کہ استعمال کندہ کیا شیئرنگ کررہے ہیں. پائیریٹ بَےپر سیمپل فائلز شیئر کرکےیہ پتا لگایا گیا کہ اتنے سائز کی مختلف مواد کی فائلز شیئر کی جارہی ہیں. ایک سو میگابائٹ کی فائل کا زیادہ چانس ہے کہ ہو ایک ڈیجیٹل میوزک کی سی ڈی ہے اور دو گیگابائٹ فائل ایک ایچ ڈی مُووی کی ہوسکتی ہے.
چار سال کی ٹریکنگ کے بعد ریسرچرز نے کسی ایک خاص مہینے میں بِٹ ٹورنٹ ایکٹیو استعمال کنندگان کی تعداد دس ہزار نوٹ کی ہے. وہ استعمال کنندگان جو اونو پلگ اِن استعمال کرنے کے لئے راضی ہوئے،انکا رویہ بہت زیادہ قابل جانچ تھا. ان میں سے زیادہ تر نے ہفتہ وار فائلز ڈاون لوڈکیں اور اکثر نے دو یا زیادہ فائلز شیئر کرنے پر توجہ رکھی. استعمال کنندگان کی پہلی سو ڈاون لوڈنگ دیکھتے ہوئے، اسّی فیصد درست اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ اگلی فائل کس طرح کی ڈاون لوڈ کی جائے گی.
ایک چیز جو واضح طور پر سامنے أئی ہے کہ کسی ایک ملک کے لوگوں میں ایک ہی طرح کے مواد کی فائلز ڈاون لوڈ کرنے کا روجھان پایا جاتا ہے. کسی ملک کی بنیادی فی کس آمدنی اور انٹرنیٹ تک رسائی کو مدِنظر رکھتے ہوئے، تجزیات یہ ظاہر کرتے ہیں کہ امیر ملک، جیسے امریکہ، میں لوگ میوزک فائلز ڈاون لوڈ کرنا پسند کرتے ہیں اور غریب ممالک، جیسے سپین، کےلوگ مووی فائلزوغیرہ . Alex Kigerl،واشنگٹن سٹیٹ یونیورسٹی میں ایک سائبر کرائم ریسرچر ہے،کے مطابق ، امیر ممالک کے لوگ انٹرنیٹ کا بھرپور فائدہ اٹھاتے ہیں اور بڑے سائز کی فائلیں ڈاون لوڈ کرتے ہیں. ڈچ تجویز کرتے ہیں کہ آن لائن سٹریمنگ سروس جیسے نیٹ فلِیکس نے امریکنز کو اس طرف لگایا ہے کہ وہ میوزک اور ٹی وی شوز ڈاون لوڈ کرتے ہیں. اس کے مقابل سپین جیسے ممالک میں جہاں یہ سہولیات میسر نہیں وہاں زیادہ وقت اس طرح کو مواد کو ڈاون لوڈ کرنے میں صرف ہوتا ہے.
یہ تھقیق انجینئرز کو فائل شئیر کرنے کے بہتر طریقے ڈیزائن کرنے میں مدد دے گی جو استعمال کنندگان کو بہترین ڈاون لوڈ سپیڈ دےگی جو ایک ہی طرح کی دلچسپی والی فائلز شیئر کرتے ہیں. یہ ڈیٹا اینٹی پائریسی پالیسیوں کی صلاحیت کو بھی جانچ سکے گی. ایک غیر شائع شدہ سٹڈی میں اسی طرح کا ڈیٹا استعمال کیا گیا ہے، ریسرچرز نے پایا ہے کہ آن لائن ڈاون لوڈنگ قواعد و ضوابط مختصر دورانئیے کےاثرات ظاہر کرتے ہیں. مثال کے طور پر جب نیوزی لینڈ کی گورنمنٹ نے three strikes قانون برائےپائریسی منظور کیا تو بِٹ ٹورنٹ سرگرمیاں کچھ عرصہ کے لئے سرد پڑگئیں، بعد میں پھر تیز ہونے لگی، فلھال قانون نافذ کرنے والے ادارےایک ایسےمیدان میں دیوار کھڑی کرنے کی کوشش کررہے ہیں جس میں داخل ہونے کے بہت سارے راستے ہیں.

Copyright © All rights reserved. | Newsphere by AF themes.