Fri. Dec 13th, 2019

scifi.pk

Urdu Science & Technology

پلوٹو پر نائٹروجن گلیشئیرز اور دھندلی ہوائیں

1 min read

پلوٹو کے برفیلے مرکز سےمنفرد قسم کے نائٹروجنی گلیشئیرز نیچے بہہ رہے ہیں.جب سے پلوٹو سورج سے دُور ہونا شروع ہوا ہے، بونے سیّارے کا ہلکا پھلکا ماحول جمنا شروع ہو چکا ہے،یہ تبدیلی بہت پہلے سے متوقع تھی، جو اس سے پہلے نہیں دیکھی گئی. پلوٹو کےساتھ سپیس کرافٹ کےاُڑنے کے دس دن بعد چوبیس جولائی کو ایک کانفرنس میں، “نیو ھورائزن” مشن کے ناسا کے سائنسدانوں نےاُبھرتی ہوئی نئی تصاویراورحقائق سے پردہ اُٹھایا ہے.

Pluto Heart
پہاڑوں، میدانی اور گلیشیر اور پلوٹو کے دل میں اور ارد گرد پائے جاتے ہیں.

نیو ھورائزنز نے “ریڈیو۔سائنس پروب” نامی ألہ کی مدد سے،پہلی دفعہ، پلوٹو کی سطح اور اس کے اُوپر کےماحول کی مقدارِمادہ کےدباٴو کی پیمائش کی ہے. سائندانوں کو جس چیز نے پریشان کردیا ہے. ورجینیا میں فئیرفیکس کی جارج میسن یونیورسٹی کے ایک ممبر اور پلانیٹری سائنسدان مائیکل سمرز نے بتایا کہ دو سال میں پلوٹو کےماحول کی مقدارِ مادہ دُگنے تناسب سے کم ہوئی ہے.”یہ بہت حیران کن هے”اُنیس سو اسّی کی دہائی کے أخر میں جب پلوٹو سورج کے بہت قریب تھا، زمین سے جو انتظامات کئے گئےان میں یہ تجویز کیا گیا کہ پچھلی دو دھائیوں میں اس کا ماحول گاڑھا ہوگیا ہے. یہ بات ان تھیوریوں کے خلاف تھی کہ نائٹروجنی ماحول جم جائےاور سکڑ جائےگا جب پلوٹوسورج سے دُور جائیگا.
سمرز یہ بتاتا ہے کہ یہ پیمائش صرف ایک ڈیٹا پوائنٹ ہے اسے ابھی تصدیق کی ضرورت ہے. اس کے ساتھ ہی اُس نے اور اُسکے ساتھیوں نےپلوٹو کے ماحول میں باریک دُھند کی پرت کا بھی اشارہ دیا ہے. دُھند سطح کے اوپر ایک سو ساٹھ کلومیٹر کےباندھ کی صورت میں پائی جاتی ہے، یہ سائنسدانوں کے اندازے سے پانچ گنا زیادہ ہے.
پلوٹو کا ماحول برف سے بھرا ہُوا ہے جو اس کی سطح کو تبدیل کردیتا ہے. “نیو ھورائزن” نے برف کی تین اقسام بیان کی ہیں، نائٹروجن، میتھین اور کاربن مونو أکسائیڈ، یہ سب دل خُوش کُن ہیں اور “ٹمبیگھو ریجو” کہلاتی ہیں.

پلوٹو کی سطح پر روشنی اور سیاہی کے طرز نائٹروجن برف بہنے کی طرف اشارہ کرنے کے لئے ظاہر ہوتے ہیں.
پلوٹو کی سطح پر روشنی اور سیاہی کے طرز نائٹروجن آئس بہنے کی طرف اشارہ کرنے کے لئے ظاہر ہوتے ہیں.

میدانوں کےٹوٹے پُھوٹےکناروں کی قریب کی تصاویر “سپوٹنِک پلانم” نائٹروجن گلیشئیر کو ظاہر کرتی ہیں. پلوٹو کا سرد ترین درجہ حرارت دوسوپینتیس ڈگری سنٹی گریڈ ہے جو مطلق صفر درجہ سے اڑتیس درجہ ذیادہ ہے. پانی کی برف شدید سخت ہے کہ یہ لُڑھک سکے، لیکن نائٹروجن ایسا کرسکتی ہے،ایسازمینی نظارہ دیکھنا ایسے ہی ہے جیسے خواب کاسچاہوجانا.
ابھی تک “نیو ھورائزن” نے جتنا ڈیٹا اکٹھا کیا ہے اسکا صرف پانچ فیصد ہی بھجوایا ہے.

Images Credit: NASA/JHUAPL/SWRI

Copyright © All rights reserved. | Newsphere by AF themes.