Wed. Nov 20th, 2019

scifi.pk

Urdu Science & Technology

سٹیم سیلز کیا ہوتے ہیں؟

1 min read

خام یا غیر متشکل خلیہ جس سے مخصوص خلیے تشکیل پاتے ہیں.
بنیادی خلئیے غیر متفرق خلیوں کی وہ قسم ہےجو خاص خلیوں میں فرق کرتی ہے. عمومی طور پر بنیادی خلئیے دو ذرائع سے آتے ہیں:
• جنینیانہ(میڈیکَل سائنس کی وہ شاخ جو ماں کے رحَم میں پَروَرِش پانے والے جَنَین کی مُکَمَّل نَشوونُما و تَکمیل کا مُطالِعَہ کَرتی ہے) ترقی کے دوران بلاسٹوسِسٹ فیز ((جنين) نہوضی نبان -) میں ایمبریو بنتا ہے(ایمبریونک سٹیم سیلز) اور
• پروان شدہ ٹِشو (adult سٹیم سیلز).
دونوں اقسام عام طورپراپنی طاقت کےحساب سے جانے جاتے ہیں،یا مختلف قسم کے خلیوں میں متوقع فرق کے لحاظ سے( جیسے جِلد، پٹھے، ھڈی وغیرہ).
پروان شدہ بنیادی خلئے
پروان شدہ یا سومیٹک بنیادی خلئےایمریونک ترقی کے بعد تمام جسم اور مختلف قسم کی ٹشوزمیں پائے جاتے ہیں. یہ بنیادی خلئے ٹشوزمیں پائے جاتے ہیں جیسے دماغ، ھڈیوں کے گُودے، خون، خون کی نالیوں، ڈھانچے کے مسلز، جِلد اور جگر. یہ سوئے ہوئے یا غیر منقسم حالت میں سالوں تک رہتے ہیں حتٰی کہ یہ کسی بیماری یا ٹشو کے زخم کی وجہ سے جاگ جائیں.
پروان شدہ بنیادی خلئے تقسیم ہوسکتے ہیں یا لامحدود مرتبہ تازہ دم ہوسکتے ہیں، اپنے آپکو اس قابل بناتے ہیں کہ عضو سے بننے والےسیل کی ایک لمبی زنجیر بناسکتے ہیں حتٰی کہ یہ اصل عضو بھی بناسکتے ہیں. عام طور پرسمجھا جاتا ہےکہ بنیادی خلئے اپنے نقطہ آغاز کی بنا پر اپنی تفریقی قابلیت میں محدود ہیں، لیکن اس بات کے ثبوت موجود ہیں کہ یہ دوسری قسم کے خلیوں میں بھی فرق کرسکتے ہیں.

stages-stem-cellایمبریونک بنیادی خلئے
ایمبریونک بنیادی خلئے چار یا پانچ دن کے انسانی ایمبریو میں سے حاصل کئے جاتے ہیں یہ بڑھوتری کا “بلاسٹوسِسٹ فیز” ہوتاہے. ایمبریوز عمومی طور پر زیادہ ہوتے ہیں جو(IVF (in vitro fertilization کلینکس میں تیار کئے جاتے ہیں جہاں ٹیسٹ ٹیوب میں بہت سے انڈے بآرآور ہوتے ہیں، لیکن عورت میں صرف ایک پروان کیا جاتا ہے. جنسی پیداوار تب شروع ہوتی ہے جب نر سپرم ایک بادہ اوّم (انڈے) کو بآرآور کرتا ہےاور ایک سیل زائیگوٹ بنتاہے. تب سنگل زائیگوٹ سیل کی ایک سیریز والی تقسیم شروع ہوتی ہے، اور دو، چار، آٹھ سولہ خلئے وغیرہ بنتے ہیں.
چار یا چھ دن کے بعد۔بچہ دانی میں پروان ہونے سے پہلے۔یہ مادہ بلاسٹوسِسٹ کہلاتا ہے. بلاسٹوسِسٹ ایک اندرونی کمیتی خلئے، ایمبروبلاسٹ (embryoblast)،اور بیرونی کمیتی خلئے، ٹروفوبلاسٹ (trophoblast)، پر مشتمل ہوتا ہے. بیرونی کمیتی خلیہ پلےسینٹا کا حصہ بن جاتاہے، اور اندرونی کمیتی خلیہ، خلیوں کا گروپ ہوتا ہے جوپروان شدہ نظام کا ڈھانچہ بننے کے لئےمتفرق ہوجائیگا. یہ بعد والا مادہ ایمبریونک بنیادی خلیہ کا ماخذ ہے جن میں یہ صلاحیت ہوتی ہے کہ ان سے جسم کا کوئی بھی خلیہ بن سکتا ہے.
نارمل حمل میں، بالسٹوسِسٹ اسٹیج ایمبریو کی بچہ دانی میں کاشتکاری تک چلتی رہتی ہے،اس جگہ تک ایمبریو “فی ٹَس” کہلاتا ہے. یہ عموماًترقی کرتے ہوئے دسویں ہفتے کے آخر میں ظاہر ہوتا ہے جب جسم کے تمام بڑے اعضا بن جاتے ہیں.
تاہم، جب ایمبریونک بنیادی خلئے کو نکالا جاتا ہے، بلاسٹوسِسٹ اسٹیج اشارہ دیتی ہے کہ بنیادی خلئے کو کب بلاسٹوسِسٹ کے“اندرونی کمیتی خلئے”کو کلچرڈش، جس میں نیوٹرنٹس بھرے ہوتے ہیں، میں علیحدہ کرنا ہے۔ متفرق ہونے کے لئے مناسب حرکت کی کمی سے، یہ تقسیم اور کاپی ہونا شروع ہو جاتے ہیں اور اپنی اس صلاحیت کو برقرار رکھتے ہوئے انسانی جسم میں کوئی بھی خلیہ بن جاتے ہیں. آخر کار، یہ غیر متفرق خلئے اسپیشل خلئے بنانے کے لئے حرکت میں آجاتے ہیں.
سٹیم سیل کلچرز
سٹیم سیلز یا تو بڑے ٹیشو سے یا کلچر ڈش میں ایک زائگوٹ کو تقسیم کرکے حاصل کئے جاتے ہیں. ایک دفع حاصل کرنے کے بعد، سائنسدان خلیوں کو ایک کنٹرول کئے ہوئے ماحول میں رکھتے ہیں جو انھیں مذید اسپیشلائیزنگ یا تفرق سے روکتا ہے لیکن عام طور پر انھیں تقسیم یا کاپی ہونے دیتا ہے. ایمبریونک بنیادی خلئے کےبڑی تعداد میں بڑھنے کا عمل بڑے بنیادی خلئے کی نسبت زیادہ آسان ہے، لیکن دونوں قسم کے سیلز کے بڑھنے میں ترق کی جارہی ہے.
سٹیم سیل لائنز
ایک دفع سٹیم سیلز کو تقسیم ہونےاور ایک کنڑول ماحول میں داخل ہونے دیا جائے، صحت مند چناو، تقسیم، اور غیر متفرق خلئے سٹیم سیلزلائن کہلاتے ہیں. stem-cells-embrio-daysیہ سٹیم سیلز بعد میں ریسرچرز کے ساتھ شئیر کئے جاتے ہیں. ایک دفع کنڑول میں آنے کے بعد، بنیادی خلئے ریسرچرز کی ھدایت کے مطابق اسپیشلئیز کرنے کے لئے متحرک کئے جاسکتے ہیں۔ اس پراسس کو ھدایت یافتہ تفرق کہتے ہیں. بڑے بنیادی خلئے کی نسبت ایمبریونک سٹیم سیلز بہت سی اقسام کے خلیوں میں تفریق کر سکتے ہیں.
پوٹینسی
مختلف اقسام کے خلیوں میں تفریق کرنے کی اہلیت کی بِنا پربنیادی خلیوں کی درجہ بندی کی جاتی ہے. ایمبریونک بنیادی خلیوں میں یہ اہلیت بدرجہ اُتم پائی جاتی ہے کیونکہ یہ جسم میں ہر طرح کے خلئے بن جاتے ہیں. مکمل درجہ بندی میں شامل ہیں:
• ٹوٹی پوٹینٹ۔ یہ تمام ممکنہ خلیوں میں تفریق کرنے کی صلاحیت ہے. مثلاً انڈے کی افزائش سے زائیگوٹ کا بننااور زائیگوٹ کی تقسیم کے نتیجے میں پہلے چند خلئے.
• پلوری پوٹینٹ۔ یہ تقریباً تمام اقسام کے خلیوں میں تفریق کی صلاحیت ہے. مثلاً ایمبریونک سٹیم سیلز اور جو خلئے میسو ڈرم، اینڈو ڈرم اور ایکٹو ڈرم سے حاصل ہوتے ہیں ایمبریونک بنیادی خلئے تفریق کے عمل کے شروع میں جراثیم کی لہریں بنتی ہیں.
• ملٹی پوٹینٹ۔ بہت قریبی ملتے جلتے خاندانی خلئے میں تفریق کی صلاحیت ہے. مثلاً ہیماٹوپوایٹک بنیادی خلئے جو خون کے سُرخ اور سفید ذرات یا پیلٹ لٹس بن سکتے ہیں.
• اولیگو پوٹینٹ۔ چند خلیوں کے درمیان فرق کرنے کی صلاحیت کو کہتے ہیں.مثلاً لیمفائیڈ یا میلائیڈ بنیادی خلئے.
• یونی پوٹینٹ۔ یہ صرف اپنی طرح کے خلئے پیدا کرنے کی صلاحیت ہے، لیکن اس میں بنیادی خلئے پر لکھی ہوئی اپنے آپکو تازہ دم کرنے کی خوبی چاہئے.
• ایمبریونک بنیادی خلئےبجائےٹوٹی پوٹینٹ کے پلوریپوٹینٹ سمجھے جاتے ہیں کیونکہ ان میں یہ صلاحیت نہیں ہے کہ یہ اضافی ایمبریونک جھلی یا پلی سینٹاکا حصہ بن سکیں.

Copyright © All rights reserved. | Newsphere by AF themes.